تازہ ترین
فرانس: پاکستان فیسٹیول کے انعقاد کی تیاری کے حوالے سے سفارت خانہ پاکستان پیرس میں سفارتی عملہ و کمیونٹی نمائندگان کے مابین اہم ملاقات         توفیق بٹ پروفیسر کالم نگار جرنلزم روزنامہ نئی بات روزنامہ نوائے وقت روزنامہ پاکستان. کتلان فیڈرشن سپین کی دعوت پر سپین آمد         “بولونیا میں مقیم محمد اسماعیل کی اہلیہ کا انتقال”         نوجوان صحافی و سماجی رہنما نقیب جرال کی جانب سے عتیق چوہدری کی صحتیابی کیلئے دعا کی اپیل         پیرس: سنیر جرنلسٹ ، +سماجی شخصیت شبانہ چوہدری کی صاحبزادی تحریم کی شادی17 اگست بروز بدھ کو عامر خان کے ساتھ انجام پائی         اٹلی کے شہر فیدنذا Fidenza,میں اقلیتیوں سے متعلق کانفرنسMinorities Conference و ادبی سمینار Adbi Seminar کی تقاریب 11 سے 16اگست تک جاری رہیں، ادبی، سماجی و مذہبی موضوعات پر خصوصی نشستوں کا اہتمام کیا گیا ، مقامی و تارکینِ وطن کمیونٹیز نے بھرپور شرکت کی اور معروف و شاعر و دانشور جیم فے غوری اور ان کی پوری ٹیم کی اس شاندار کاوش کو بے حد سراہا         نیویارک میں پاکستان کے جشن آزادی کی تقریبات برونکس میں دعائیہ تقریب، ملک وقوم کی سلامتی کےلئے خصوصی دعا         جشن یوم آزادی پاکستان پروگرام پی سی سی اور پی سی ایف اے کے زیر اہتمام ملی جوش و جذبہ کے ساتھ منایا گیا         پاکستان مسلم لیگ ن آسٹریا کی جانب سے یوم آذادی کی تقریب انعقاد کیا گیا         ولینڈ کے دارالحکومت وارسا میں جشن آزادی پاکستان کی تقریب سے خطاب         سوہنی دھرتی اللہ رکھے ۔قدم قدم آباد تجھے پاکستان بزنس ایسوسی ایشن کے زیراہتمام یوم آزادی پاکستان کی پروقار تقریب         فرانس: بھارت کے یومِ ازادی پر پیرس میں یومِ سیاہ ، کشمیری بہن بھائیوں سے اظہارِ یکجہتی کیلئے پوری پاکستانی و کشمیری کمیونٹی ا مڈ آئی         کوریا کے معروف بزنس مین ملک ندیم پاکستان بزنس اسوسی ایشن تھیگوکوریا کے ہیڈ مقرر         اٹلی: معروف شاعر و دانشور جیم فے غوری نے وطنِ عزیز کے ستر ویں یومِ آزادی کے موقع پر پاکستان قونصلیٹ میلان میں ہونے والی پرچم کشائی کی تقریب میں بھرپور ملی جوش و جزبہ سے شرکت کی         پیرس، وفاقی وزیر تعلیم بلیغ الرحمن کا نجی دورہ پیرس، شمروز الہی گھمن چئیرمین ایڈوائزری کونسل (مسلم لیگ نون یورپ) کا خیر مقدم اور پر تپاک استقبال        

حضرت حبیب بن اسلم راعی رحمتہ اللہ علیہ

حضرت حبیب بن اسلم راعی رحمتہ اللہ علیہ

حضرت حبیب بن اسلم راعی رحمتہ اللہ علیہ بکریاں پالتے تھے اور فرات کے کنارے چرایا کرتے تھے آپ کا مسلک خلوت گزینی تھا ایک بزرگ بیان کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ میرا گذر اس طرف ہوا تو کیا دیکھتا ہوں کہ آپ تو نماز میں مشغول ہیں اور بھیڑیا ان کی بکریوں کی رکھوالی کر رہا ہے۔میں ٹھہر گیا کہ اس بزرگ کی زیارت سے مشرف ہونا چاہیے جن کی بزرگی کا کرشمہ آنکھوں سے دیکھ رہا ہوں بڑی دیرتک انتظار میں کھڑا رہا یہاں تک کی جب وہ نماز سے فارغ ہوئے تومیں نے سلام عرض کیا۔آپ نے جواب سلام کے بعد فرمایا کس کام آئے ہو؟میں نے عرض کیا بغرض زیارت۔فرمایا”جزاک اللہ“اس کے بعد میں نے عرض کیایا حضرت!آپ کی بکریوں سے بھیڑیے کو ایسا لگاؤ ہے کہ وہ ان کی حفاظت کر رہا ہے فرمایا اس کی وجہ یہ ہے کہ بکریوں کے چرواہے کو حق تعالیٰ سے دلی ربط ہے۔یہ فرما کر آپ نے لکڑی کے پیالے کو پتھر کے نیچے رکھ دیا۔پتھر سے دو چشمے جاری ہوئے۔ایک دودھ کا اور دوسرا شہد کا۔پھر فرمایا نوش کرو۔میں نے عرض کیا آپ نے یہ مقام کس طرح پایا؟آپ نے جواب دیا سید عالم صلی اللہ وسلم کی متابعت کے ذریعہ اے فرزند!حضرت موسیٰ علیہ السلام،حضور سید عالم صلی اللہ علیہ وسلم کے درجہ میں نہ تھے۔جب کہ میں حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا ایک فرمانبردار ہوں تو یہ پتھرمجھے دودھ اور شہد کیوں نہ دے گا۔حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم موسیٰ علیہ السلام سے افضل ہیں۔پھر میں نے عرض کیا مجھے نصیحت فرمائیے۔آپ نے فرمایا”لاتجعل قلبک ضدوق الحرص وبطنک وعاء الحرام“یعنی اپنے دل کو حرص کی کوٹھری اور اپنے پیٹ کو حرام کی گٹھری نہ بنانا کیونکہ لوگوں کی ہلاکت انہیں دو چیزوں میں مضمر ہے اور ان کی نجات ان سے دوررہنے میں ہے۔

Related posts