قومی ایئرلائن پی آئی ائے کا کویت روٹ سیالکوٹ سیکٹر کے لیے بحال کر دیا گیا، کویت میں مقیم پاکستانیوں کا خوشی کا اظہار

قومی ایئرلائن پی آئی ائے کا کویت روٹ سیالکوٹ سیکٹر کے لیے بحال کر دیا گیا، کویت میں مقیم پاکستانیوں کا خوشی کا اظہار

(محمد عرفان شفیق۔ کویت) قومی ایئرلائن پی آئی ائے نے ایک سال سے زائد عرصہ معطل رہنے کے بعد کویت سیالکوٹ کا ہفتہ وار روٹ بحال کر دیا ہے۔ اس سلسلے میں کویت کے ایئرپورٹ پر تقریب منعقد کی گئی جس میں سفارتخانہ پاکستان کے ہیڈ آف مشن اشعر شہزاد، پاکستان تحریک انصاف کویت کے صدر پیر امجد حسین، پاکستانی کمیونٹی کی سرکردہ شخصیات، ٹریولز ایجنٹس، کویت میں پی آئی اے کے سپانسر الکاظمی گروپ کے ممبران نے شرکت کی۔ دیگر شخصیات میں حافظ شبیر، ماجد چوہدری، پی ٹی آئی کویت کے چیر مین ایگزیکٹیو گروپ اخلاق احمد ملک، سینئر وائس چیرمین شہزادالرحمان بٹ، نائب صدر آصف جمال، فخر زمان یوتھ سیکرٹری، ڈپٹی جنرل سیکرٹری راجہ بلال، انفارمیشن سیکرٹری عامر روشن، ایونٹ آرگنائزر خالد منہاس، محمد فیصل، یاسر قاضی اور عبید الرحمان آرائیں شامل تھے۔ کویت بین الاقوامی ہوائی اڈہ پر پی آئی اے بورڈنگ لاو¿نج کو کویت اور پاکستان کے جھنڈوں اور غباروں کے رنگوں سے سجایا گیا تھا۔ اس موقع پر یادگاری کیک بھی کاٹا گیا۔
تقریب میں پی ٹی آئی کے سینئر قیادت نے سفارتخانہ کے عملے کیساتھ ملکر پی آئی اے میں سفر کرنے والے مسافروں کو رخصت کیا۔ بعد میں پی آئی اے کی طرف سے مسافروں میں تخائف بھی تقسیم کی۔ پی آئی ائے انتظامیہ کیجانب سے پیر امجد حسین، اخلاق احمد ملک، عبید الرحمان آرائیں، ماجد چوہدری، حافظ شبیر اور آصف جمال کو انکی خدمات پر اعزازی شیلڈ پیش کی۔
کویت میں قومی ایئرلائن کی بندش سے قبل لاہور، سیالکوٹ اور اسلام آباد کے لیے ہفتہ وار پروازوں کو سلسلہ تھا۔ کویت میں پی آئی ائے کی پرواز کم و بیش ڈیڑھ سال سے بند ہے، اس دوران پاکستانی مسافر خلیجی ممالک کی دیگر ایئرلائنز سے مستفید ہوتے تھے جس میں امارات، گلف ایئر، عمان ایئر و دیگر شامل تھیں۔ کویت سے کویت ایئرویز کی ہفتہ وار لاہور اور سلام آباد کی پروازیں چل رہی ہیں جبکہ الجزیرہ ایئرویز نے بھی لاہور کے لیے سروس شروع کر رکھی ہے۔ کویت میں قومی ایئرلائن کا سب سے زیادہ فائدہ میتوں کی ترسیل کا تھا جو کہ پاکستانیوں کی میتیں مفت پاکستان پہنچاتی تھی جبکہ دیگر ایئرلائن اس سروس کی رقم چارج کرتی ہیں۔
کویت میں پاکستانیوں کی تعداد کم و بیش ۱یک لاکھ کے لگ بھگ ہے لیکن پاکستانیوں کے لیے ویزہ پابندی کی وجہ سے یہ تعداد کم ہو رہی ہے۔ دیار غیر میں رہنے والے پاکستانی پر امید ہیں کہ سیالکوٹ کے ساتھ ساتھ لاہور، پشاور، اسلام آباد و دیگر شہروں سے بھی ڈایریکٹ پروازوں کا اجرا جلد ممکن ہو سکے گا۔

About The Author

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *